Tuesday, May 21, 2024
Ranchi Jharkhand

حج ہاؤس رانچی میں امن و انصاف کانفرنس آج

امارت شرعیہ بہار،اڈیشہ و جھارکھنڈکے زیر انتظام ملک کی نمائندہ ملی تنظیموں کے اشتراک سے کانفرنس کی تیاریاں مکمل۔


(پریس ریلیز: رانچی) کسی بھی قوم،ملک اور سماج کی ترقی و استحکام امن وانصاف کے بغیر ممکن نہیں، تاریخ و تجربات بتاتے ہیں کہ جن قوموں اور ملکوں نے امن و انصاف کا دامن چھوڑا انحطاط اور زوال ان کا مقدر بن کر رہ گئی اور وہ خانہ جنگی اور بربادی کے ایسے دلدل میں جا پھنسے کہ ان کے نشانات بھی باقی نہ رہے۔ ہماری بد قسمتی ہے کہ اس وقت ہمارے ملک و سماج میں بھی شعوری اور غیر شعوری طور پر انصاف کی آواز دبتی جارہی اور امن و سکون غارت ہوتا جا رہا ہے، محبت و اتحاد کی جگہ نفرت و فساد، اخوت و بھائی چارہ کی جگہ عداوت و دشمنی اور امن و انصاف کی جگہ ظلم و ناانصافی کا بول بالا ہے، ملک کا انصاف اور امن پسند سماج موجودہ وقت میں کراہ رہا ہے، صدیوں کی محبت اور آپسی قربت دوریوں اور نفرتوں میں تیزی سے بدل رہی ہے، ملک کا آئینی ڈھانچہ اور اس کی تہذیب و شناخت شدید خطرہ میں ہے اور ایسے افسوسناک مناظر و واقعات ظہور پذیر ہو رہے ہیں جن کو دیکھ کر انسانیت کانپ اٹھتی ہے۔ ایسے حالات میں امن اور انصاف میں یقین رکھنے والے تمام ذمہ دار شہریوں کا فرض بنتا ہے کہ ملک میں بلا تفریق مذہب و ملت امن و انصاف کی فضا کو عام کرنے اور ملک و سماج کو سکون سے ہمکنار کرنے کے لئے آگے آئیں اور اپنا کردار ادا کریں۔ اسی ضرورت اور احساس کے پیش نظر ملک کی تمام بڑی ملی تنظیموں نے امن و انصاف کی فضا کو عام کرنے اور ہر سطح پر انصاف و سکون کا ماحول بنانے کی ضرورت کا احساس پیدا کرنے کی غرض سے مشترکہ طور پر امن و انصاف کی مہم کا ملکی سطح پر آغاز کیا ہے۔ اس سے قبل یہ امن و انصاف کانفرنس ملک کی نمائندہ بڑی ملی تنظیموں ”جماعت اسلامی ہند، جمعیۃ علماء ہند،امارت شرعیہ بہار،اڈیشہ و جھارکھنڈ، جمعیۃ اہل حدیث، آل انڈیا ملی کاؤنسل اور جماعت اہل سنت“ نے تین ریاستوں کے مرکزی شہر گجرات، گوہاٹی اور لکھنؤ میں کیا۔اس کے بعد یہ تنظیمیں امن و انصاف مہم کے تحت ریاست جھارکھنڈ کی دار الحکومت رانچی کی سرزمین پر امن و انصاف کانفرنس زیر صدارت مفکر ملت حضرت مولانا سید احمد ولی فیصل رحمانی مد ظلہ العالی امیر شریعت بہار، اڈیشہ و جھارکھنڈ واقع حج ہاؤس میں ۲/ اکتوبر کو کرنے جارہی ہیں۔ جس کی میزبانی امارت شرعیہ بہار،اڈیشہ و جھارکھنڈ دیگر ملی تنظیموں کے اشتراک سے کر رہی ہے۔اس اجلاس کی تیاریوں کو امارت شرعیہ کے ذمہ داران حضرت مولانا محمد شمشاد رحمانی قاسمی نائب امیر شریعت بہار اڈیشہ و جھارکھنڈ، حضرت مولانا محمد شبلی القاسمی قائم مقام ناظم امارت شرعیہ اور حضرت مولانا، مفتی محمد سہراب ندوی نائب ناظم امارت شرعیہ و مولانا احمد حسین قاسمی مدنی معاون ناظم امارت شرعیہ رانچی شہر میں موجود رہ کر قریب سے دیکھ رہے ہیں۔ واضح رہے کہ اس کانفرنس میں ملکی و صوبائی سطح کی ملی تنظیموں کے سربراہان، مختلف مذاہب کے پیشوا اور نمائندگان کی شرکت ہوگی۔ خصوصی طور پر ملی تنظیموں کے قومی رہنما حضرت مولانا سید محمود اسعد مدنی صدر جمعیۃ علماء ہند، محترم جناب سید سعادت اللہ حسینی امیر جماعت اسلامی ہند،حضرت مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی امیر جمعیۃ اہل حدیث ہند اور حضرت مولانا انیس الرحمن قاسمی نائب صدر آل انڈیا ملی کونسل کے نام قابل ذکر ہیں۔ اجلاس کی تیاریاں مرحلہ وار مکمل ہو چکے ہیں۔ خصوصیت کے ساتھ سماج کے تعلیم یافتہ، بااثر شخصیات، ذمہ دار افراد،علماء و ائمہ،دانشوران اور سماجی و مذہبی رہنماکی شرکت کو زیادہ سے زیادہ یقینی بنانے کی کوشش کی گئی ہے۔ اس سلسلہ میں باقی ملی تنظیموں کے ذمہ داران،شہر رانچی کی مؤقر شخصیات اور مذہبی رہنماؤں کے ساتھ مختلف میٹنگیں ہو چکی ہیں۔ وہ حضرات بھی اجلاس کی کامیابی کے لئے کوشاں ہیں۔ اس اجلاس کو بامقصد بنانے کے لئے مرکزی دفتر امارت شرعیہ پھلواری شریف،پٹنہ کا ایک وفد کئی دنوں سے امارت شرعیہ بہار، اڈیشہ و جھارکھنڈ کربلا ٹینک روڈ رانچی میں سر گرم عمل ہے اور کانفرنس کی تیاریوں میں جنگی پیمانہ پر مصروف ہے جس میں امارت شرعیہ کے نائب ناظم جناب مولانا و مفتی محمد سہراب ندوی کے علاوہ جناب مولانا احمد حسین قاسمی مدنی معاون ناظم امارت شرعیہ،جناب مولانا سہیل احمد قاسمی انچارج امارت پبلک اسکول، جناب مولانا ظہیر الحسن شمسی، جناب مولانا مجاہد اللہ قاسمی،جناب حافظ شہاب الدین، مولانا رفیع احمد ندوی مبلغین امارت شرعیہ شامل ہیں۔ اس اجلاس کے کنوینر مولانا و مفتی محمد انور قاسمی قاضی شریعت امارت شرعیہ بہار، اڈیشہ و جھارکھنڈ کربلا ٹینک روڈ رانچی، اور ان کے رفیق مولانا و مفتی محمد ابو داؤد قاسمی، مولانا سہیل سجاد قاسمی انچارج امارت پبلک اسکول، مولانا ظہیر الحسن شمسی،مولانا مجاہد اللہ قاسمی، حافظ شہاب الدین اور مولانا رفیع ندوی مبلغین امارت شرعیہ نیزشہر رانچی کے حضرات علماء و ذمہ داران اس کانفرنس کو مکمل طور پر کامیاب بنانے کے لئے پوری طرح فکر مند ہیں۔

Leave a Response