Saturday, April 20, 2024
Blog

اعــــلان صـــدقــة الفطرد ارالقضاء امارت شرعیہ

🔷صدقۂ فطر فی کس کم از کم ساٹھ روپئے کے حساب سے ادا کریں۔

دارالقضاء امارت شرعیہ رانچی

🔷گیہوں کے علاوہ جَو، پنیر ، کشمش اورکھجور سے بھی صدقۂ فطر ادا کرنے کا اہتمام کیا جائے

رانچی : دارالقضاء امارت شرعیہ رانچی کے قاضی شریعت مفتی محمد انور قاسمی نے ایک پریس بیان میں کہا ہے کہ صدقۂ فطر کی مقدار فی کس ایک صاع جَو، پنیر ، کشمش ،کھجور یا فی کس نصف صاع گیہوں یا اس کا آٹا یا ستّو ہے ، نصف صاع کا وزن موجودہ رائج وزن کے اعتبار سے ایک کیلو چھ سو بانوے گرام اور ایک صاع کا وزن تین کیلو تین سو چوراسی گرام کے برابر ہوتا ہے اس لئے جو مسلمان صاحب نصاب صدقۂ فطر میں گیہوں یا اس کاآٹا یا اس کا ستّو ادا کرنا چاہیں وہ فی کس ایک کیلو چھ سو بانوے گرام کے حساب سے ادا کریں اوررقم کی شکل میں اس کی قیمت ادا کرنے کی صورت میں سال رواں (۱۴۴۵ھ) میںشہر رانچی اور اس سے ملحقہ مواضعات میں صدقۂ فطر فی کس کم از کم ساٹھ روپئے کے حساب سے ادا کیا جائے نیز جو حضرات صدقہ ٔ فطر میں جَو، پنیر ، کشمش یاکھجورادا کرنا چاہیں وہ فی کس تین کیلو تین سو چوراسی گرام کے حساب سے ادا کریں اور مذکورہ اشیاء کی قیمت رقم کی شکل میںادا کرنے کی صورت میں شہر رانچی اور اس سے ملحقہ مواضعات میں فی کس کم از کم جَو میں ایک سو پچپن روپئے کھجور میں ایک ہزار ایک سو پچاسی روپئے کشمش میں نو سو چودہ روپئےپنیر میں ایک ہزار بانوے روپئے ادا کریں،انہوں نے کہا کہ یہ شہررانچی کی اوسط قیمت کے اعتبار سے طے کیا گیا ہے ،رانچی کے علاوہ یگر مقامات میں صدقۂ فطر،قیمت کی شکل میں ادا کرنے کی صورت میں اپنے ، اپنے علاقہ اور مقام میں اوسطاً فروخت ہونے والے گیہوں یاآٹاکے ایک کیلو چھ سو بانوے گرام اور جَو، پنیر ، کشمش ،کھجورکے تین کیلو تین سو چوراسی گرام کی جو قیمت ہوتی ہو وہ فی کس کے حساب سے ادا کیا جائے انہوں نے کہا کہ جو اس سے بڑھا کر دینا چاہیں وہ دے سکتے ہیں، صدقۂ فطر ہرایسے مسلمان پر واجب ہے جس کے پاس عید کی صبح حوائج اصلیہ سے زائد اور قرض سے فارغ ساڑھے سات تولہ سونا(87گرام 480ملی گرام) یا ساڑھے باون تولہ چاندی(612گرام 360 ملی گرام) یا ان دونوں میں سے کسی ایک کی قیمت کے بقدر دوسری مالیت ہو،نیز ایسے ہرصاحب نصاب کو اپنی اور اپنی نابالغ اولاد کی طرف سے عید کی نماز سے قبل صدقۂ فطر نکالنا واجب ہے ۔حضور صلی اللہ علیہ و سلم سے گیہوں کے علاوہ جَو، پنیر ، کشمش اورکھجور سے بھی صدقہ ٔفطر ادا کرنے کی ہدایت ثابت ہے لہٰذامذکورہ اشیاء سے بھی صدقہ فطر ادا کرنے کا اہتمام کرنا چاہیئے تاکہ مستحقین کو زیادہ فائدہ پہونچے، جن کو اللہ نے مالی فراوانی عطاء فرمائی ہے انہیں خصوصاً اس طرف متوجہ ہونا چاہئے ۔

Leave a Response