Tuesday, July 16, 2024
Jharkhand News

سوشانت برین ہیمرج سے انتقال کر گئے، اپنے اعضاء عطیہ کرکے چار لوگوں کو نئ زندگی دی

 

30 سالہ سوشانت برین ہیمرج سے انتقال کر گئے، اپنے اعضاء عطیہ کرکے چار لوگوں کو نئ  زندگی دی

 ,

 30 سالہ سوشانت کمار سنگھ نے اپنے تمام اعضاء اور ٹشوز عطیہ کر دیے۔  سوشانت کی موت برین ہیمرج کی وجہ سے ہوئی، اس نے اپنے تمام اعضاء عطیہ کرکے مزید جانیں بچائی ہیں۔  سوشانت نے اپنی آنکھ کا ٹشو بھی عطیہ کیا تھا۔  ان کے اس نیک عمل سے چار جانیں بچ گئیں، چار افراد کو اعضاء کی پیوند کاری کے ذریعے نئی زندگی کا انمول تحفہ ملا۔
 سوشانت کے والد سریندر کمار سنگھ بوکارو اسٹیل پلانٹ سے ریٹائر ہوئے ہیں، جو اس وقت رانچی میں مقیم ہیں۔  سوشانت بی آئی ٹی میشرا سے پاس آؤٹ ہیں ، لندن میں فیس بک میں بھی کام کر رہے  تھے۔
 لندن کی آرگن اینڈ ٹشو ڈونیشن اینڈ ٹرانسپلانٹیشن ٹیم کے آفیشل لیٹر کے مطابق بتایا گیا ہے کہ سوشانت کے عطیہ کردہ آرگن ٹرانسپلانٹ سے چار لوگوں کو زندگی کا عطیہ ملا ہے۔
 *سوشانت کی بے لوث سخاوت کے نتیجے میں، چار لوگوں کے اعضاء کی پیوند کاری ہوئی ہے۔*
 اس میں ایک پچاس سالہ خاتون کو ٹرانسپلانٹ کی ویٹنگ لسٹ میں صرف دو ماہ بعد ہارٹ ٹرانسپلانٹ کا تحفہ ملا۔
 اس کے علاوہ ایک پچاس سالہ خاتون کو ویٹنگ لسٹ میں صرف دو دن کے بعد زندگی بچانے والا لیور ٹرانسپلانٹ ملا ہے۔
 تین سال سے زائد عرصے تک ٹرانسپلانٹ کی ویٹنگ لسٹ میں رہنے کے بعد ایک نوجوان نوعمر لڑکی کو کڈنی ٹرانسپلانٹ حاصل کرنے میں مدد  ملی۔


 چالیس کی دہائی کے ایک  آدمی کو چھ سال انتظار کی فہرست میں رہنے کے بعد اعضاء کا دوہرا ٹرانسپلانٹ، ایک گردہ اور لبلبہ حاصل ہوا۔
 سوشانت کے اعضا عطیہ کرکے اور لوگوں کو زندگی دے کر اس نے انہیں ایک نئی محفوظ زندگی دی ہے۔  اپنی نیکی کے ساتھ، سوشانت اپنی موت کے بعد بھی دوسروں کے لیے ایک یادگار مثال ہیں۔

Leave a Response