Sunday, July 21, 2024
Ranchi Jharkhand News

مولانا احمد حسین قاسمی کی والدہ نم انکھوں کے ساتھ سپرد خاک

جنازہ میں وفد امارت شرعیہ کے علاوہ کثیر تعداد میں علماء کی شرکت
(۱۲/مئی،دربھنگہ)
امارت شرعیہ کے معاون ناظم جناب مولانااحمد حسین قاسمی مدنی صاحب کی والدہ کل مورخہ 11 مئی کو اللہ کو پیاری ہو گئیں۔ ان کی جنازہ کی نماز آج 12 مئی کو بعد نماز ظہر مولانا کے آبائی گاؤں بردی پور میں ادا کی گئی اور بردی پور قبرستان میں ہی تدفین عمل میں آئی ۔ جنازہ میں عوام و خواص اور مقامی علماء کرام کے علاوہ امارت شرعیہ کے ایک وفد نے بھی شرکت کی
واضح رہے کہ مولانا مدنی کی والدہ کی وفات کی اطلاع جیسے ہی امارت شرعیہ پہونچی امیر شریعت حضرت مولانا احمد ولی فیصل رحمانی مدظلہ نے اس سانحہ پر اپنے گہرے صدمہ کا اظہار کرتے ہوئے ہدایت فرمائی کہ مرکزی دفتر امارت شرعیہ سے علماء کرام کا ایک وفد بردی پور پہونچ کر تعزیت مسنونہ پیش کرے اور جنازہ کی نماز و تدفین کے عمل میں شریک ہو۔چنانچہ آج مورخہ 12مئی کو قائم مقام امارت شرعیہ کے مشورہ سے امارت شرعیہ کا ایک وفد نائب ناظم امارت شرعیہ جناب مولانا مفتی محمد سہراب ندوی قاسمی کی قیادت میں 1بجے دن بردی پور دربھنگہ پہونچا ۔ وفد میں مفتی صاحب کے علاوہ معاون ناظم جناب مولانا قمر انیس قاسمی مفتی شاہنواز عالم مظاہری مولانا عبدالقدوس مظاہری اور جناب محفوظ عالم شریک تھے نیز دارالقضاء امارت شرعیہ مہدولی دربھنگہ کے قاضی شریعت مولانا ارشد علی قاسمی صاحب بھی جنازہ میں شرکت ہوئی۔ قاٰئد وفد مفتی محمد سہراب ندوی صاحب نے سب سے پہلے وفد کے ساتھ مولانا احمد حسین قاسمی صاحب کے گھر پہونچ کر ذمہ داران امارت شرعیہ کی طرف سےاہل خانہ کی تعزیت کی۔ اس کے بعد جنازہ کی نماز سے قبل امیر شریعت حضرت مولانا احمد ولی فیصل رحمانی مدظلہ ۔قائم مقام ناظم مولانا محمد شبلی القاسمی ودیگر ذمہ داران وکارکنان اور حضرات مبلغین کی طرف سے تعزیتی کلمات پیش کئے
انہوں نے اس موقع پر مختصر خطاب بھی فرمایا ۔انہوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ موت وحیات سب کچھ اللہ کی مرضی کے تابع ہے اور رب کے فیصلہ سے راضی ہونا ہی ایمان کی پہچان ہے اور یہی چیز مشکل گھڑی میں انسان کو صبر کی قوت عطا کرتی ہے اس لئے اس موقع پر بھی اسی سوچ کے ساتھ صبر سے کام لینا ہی ایمانی تقاضہ ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ جو حضرات بھی مرحومہ سے تعلق رکھتے ہیں انہیں چاہئے کہ جنازہ کے بعد بھی اپنی دعاٶں اور نیک اعمال کرتے وقت انہیں یاد رکھیں
اخیر میں مفتی صاحب نے حدیث پاک کے حوالہ سے کہا کہ ہمیں اللہ کے نبی نے اس بات کی تلقین کی ہے کہ جانے والے ہر انسان کو اچھے کلمات سے یاد کیا جاۓ ۔خبردار کبھی انہیں نا مناسب کلمات سے یاد نہ کیا جائے۔
مولانا احمد حسین صاحب کے بہنوی قاری محمد علی قادری صاحب نے بھی مرحومہ کی زندگی کے قابل قدر خوبیوں کا تذکرہ کیا۔مرحومہ بلاشبہ صوم و صلاة کی پابند نیک خاتون تھیں اللہ تعالی نے انہیں جودوسخا اور اولاد کی بہتر تربیت کا سلیقہ عطا فرمایا تھا۔دعا ہے کہ للہ تعالی مرحومہ کی بال بال مغفرت فرماۓ اور جنت نعیم میں بلند مقام سے نوازے۔جنازہ کی نماز مرحومہ کے صاحبزادے جناب مولانا احمد حسین قاسمی مدنی معاون ناظم امارت شرعیہ نے پڑھائی۔

Leave a Response