Tuesday, May 21, 2024
Ranchi News

مجلس علماء کے تینوں ونگ مجلس سرپرستان، مجلس شورای اور مجلس عاملہ کی مشترکہ نشست منعقد

رانچی: آج مورخہ 18 جون بمقام راعین ہندپیڑھی رانچی میں زیر صدارت حضرت مولانا صابر حسین مظاہری، مجلس علماء کے تینوں ونگ مجلس سرپرستان، مجلس شورای اور مجلس عاملہ کی مشترکہ نشست منعقد ہوئی۔ جس میں ریاست جھارکھنڈ کے متعدد اضلاع کے علماء نے شرکت فرمائی۔ نشست میں کئی اہم مسائل پر غور و خوض کیا گیا اور مجلس کو متحرک و فعال بنانے کے لئے متعدد تجاویز پاس کیے گئے۔

 خصوصی طور پر مندرجہ ذیل اہم فیصلے کیے گئے۔ پہلا مجلس علماء جھارکھنڈ ایک پرانی تنظیم ہے۔ جسے اکابرین ین حضرت مولانا سید ابو الحسن علی ندوی، حضرت مولانا عبدالکریم، حضرت مولانا احمد علی قاسمی، حضرت مولانا قاری علیم الدین قاسمی نے اپنی رہنمائی و سرپرستی میں قائم کی تھی۔ لیکن بعد میں کچھ علمائے کرام کے ذریعہ اسے مرکزی مجلس علماء کر دیا گیا تھا۔ بل اتفاق مرکزی لفظ کو ہٹا کر مجلس علماء کر دیا گیا۔  

واضح ہو کہ مجلس علماء جھارکھنڈ سوسائٹی ایکٹ کے ذریعہ رجسٹرڈ ہے۔(دوسرا)  رجسٹرڈ با یلاج کے علاوہ ایک ترمیمی دستور کچھ دنوں قبل تیار کی جا جا چکی تھی۔ لیکن اس کے خواندگی نہیں ہو پائی تھی۔آج کی نشست میں  اس کی باقاعدہ خواندگی کے ساتھ ترمیم اور اضافہ کر اہم کام انجام دیا گیا۔اس کے علاوہ تنظیم کی توسیع پر غور و فکر کرتے ہوئے ریاست کے سبھی اضلاع میں ضلعی شاخ قائم کرنے کا فیصلہ لیا گیا۔ مجلس علماء جھارکھنڈ یکساں سول کورٹ کے سلسلے میں مسلم پرسنل لا بورڈ کی ہدایات اور فیصلے کے مطابق عمل کرے گی۔ نشست کے بعد راعین مسجد میں واقع لاج کے ایک کمرے میں مجلس علماء جھارکھنڈ کے باقاعدہ دفتر کا افتتاح کیا گیا۔

 نشست کا اختتام فخر جھارکھنڈ شیخ الحدیث حضرت مولانا مفتی نذر توحید المظاہری کی دعا پر ہویٔ۔ نشست کی شروعات مولانا نعمان کے تلاوت قرآن پاک سے ہوا۔ نعت پاک قاری قرآں قاری صہیب احمد نے پڑھا۔ سکریٹری رپورٹ مفتی طلحہ ندوی نے پیش کیا۔  نشست میں حضرت مولانا صابر حسین حسین، مولانا شریف احسن مظہری، مفتی طلحہ ندوی، مولانا ضیاء الرحمان، مفتی سلمان قاسمی، مفتی نذر توحید، مولانا شکیل، مولانا ضیاء الہدی،  مولانا طاہر حسین، مولانا جبار، قاری اشرف، مولانا منصور، مولانا امتیاز، مفتی قمر عالم قاسمی، قاری صہیب احمد، مولانا امام الدین، مولانا عبدالرؤف، مفتی ابوداؤد، مولانا عبدالمنان، مولانا عبدالواجد چترویدی، مولانا منظور اٹکی، مولانا عبدالرشید، مفتی راشد، مولانا سمیع الحق، مفتی عمران ندوی، مولانا شوکت، مولانا عبدالقیوم، مفتی عزیز، مولانا  نعمان، قاری اسجد، حافظ زبیر احمد، قاری جان محمد، مولانا نعیم الدین، مولانا جلیل، مولانا سجاد، مولانا یسین، سمیت سینکڑوں لوگ تھے۔ آخیر میں  حضرت مولانا رابع حسنی ندوی اور حضرت مولانا اسلام صاحب کے تعزیتی مسنونہ پیش کیا گیا۔

Leave a Response